(+92) 0317 1118263

خرید و فروخت

پھل تیارہونے سے پہلے باغ کی خریدوفروخت کاحکم

پھل تیارہونے سے پہلے باغ کی خریدوفروخت کاحکم فتوی نمبر: 28469

الاستفتاء

میرا ایک باغ ہے جس کا پھل ابھی نکلا ہے لیکن تیار نہیں ہوا میں اس کو فروخت کرنا چاہتا ہوں کیا یہ جائز ہے؟

الجواب حامدا و مصلیا

مذکور باغ کے پھل اگر نکل آئے ہوں تو بغیر کسی شرط کے اس کا بیچنا جائز ہے، اور اس سودا کے بعد سائل پھلوں کو تیار ہونے تک درخت پر رہنے دے تو اس کا اسے اختیار ہے۔


في رد المحتار: تحت (قولہ: ظہر صلاحہا أولا) (إلى قوله) وإن کان بحیث ینتفع بہ ولو علفًا للدواب فالبیع جائز باتفاق أہل المذہب إذا باع بشرط القطع أو مطلقًا۔ اھـ (ج۴، ص۵۵۵)


وفي الدر المختار: قید باشتراط الترک، لأنہ لَو شراہا مطلقًا وترکہا بإذن البائع طاب لہ الزیادۃ۔ الخ۔ (ج۴، ص۵۵۶) واللہ اعلم!