(+92) 0317 1118263

طلاق

تم میری بہن کی طرح ہو کہنے سے بیوی پر طلاق واقع ہوگی؟

تم میری بہن کی طرح ہو کہنے سے بیوی پر طلاق واقع ہوگی؟ فتوی نمبر: 33249

الاستفتاء

ایک شخص نے اپنی بیوی کو کہا کہ ’’اگر میں گاڑی میں گیا تو تم میری بہن کی طرح ہو‘‘ پھروہ شخص گاڑی میں چلا گیا، کیااس سے ظہار ہوگیا؟
نوٹ: ایسا غصہ میں کہا اور نیت کسی چیز کی بھی نہیں تھی۔

الجواب حامدا و مصلیا

خط کشیدہ الفاظ سے سائل کی کوئی نیت (طلاق یا ظہار کی) نہیں تھی محض غصہ میں یہ الفاظ بولے تھے جیسا کہ سوال میں درج نوٹ سے بھی یہی معلوم ہورہا ہے تو اس سے ظہار متحقق نہیں ہوا، اس لئے مذکور میاں بیوی حسب سابق میاں بیوی کی طرح زندگی بسر کرسکتے ہیں مگر آئندہ اس طرح کے الفاظ جس سے بلا وجہ شکوک و شبہات پیدا ہوتے ہوں، کہنے سے بھی اجتناب لازم ہے تاکہ گھر کا ماحول خراب نہ ہو۔


کما فی الہندیۃ: قال لہا أنت مثل أمی ولم یقل علی ولم ینوشیأ لا یلزمہ شیئ فی قولہم کذا فی فتاویٰ قاضیخان الخ (ج۱، ص۵۰۷)۔ واللہ اعلم