(+92) 0317 1118263

امانت و ودیعت

کسی ایک شریک کا مشترکہ چیز کوفروخت یا گفٹ کرنا

کسی ایک شریک کا مشترکہ چیز کوفروخت یا گفٹ کرنا فتوی نمبر: 41021

الاستفتاء

مسئلہ یہ کہ ہم پندرہ ساتھیوں نے برابر پیسے جمع کرکے اپنے کام کیلئے پرنٹر مشین خریدی ہے، اس کو ہم سب نے کافی استعمال کیا، پھر میرے اکثر ساتھی اس پرنٹر کو چھوڑ کر چلے گئے، کسی نے اس میں اپنے حصے کے بارے میں کوئی صراحت نہیں کی کہ اس کو ہدیہ، وقف، فروخت کرنا وغیرہ، اور کچھ ساتھی اس کو اب بھی استعمال کررہے ہیں، اب سوال یہ ہے کہ پرنٹر مشین کا کیا حکم ہے؟ اور موجودہ پندرہ ساتھی اس کے بارے میں اپنی مرضی سے فیصلہ کرسکتے ہیں کہ نہیں؟ جیساکہ اس کو فروخت کرنا گفٹ کرنا۔

الجواب حامدا و مصلیا

صورت مسئولہ میں جن پندرہ ساتھیوں نے پرنٹر مشترکہ خریدا تھا ،وہ تمام افراد اب بھی مذکور پرنٹر کےمالک شمار کئےجائینگے ، پرنٹر کوفروخت کرنےیاگفٹ کرنے سےقبل ان تمام افراد سے زبانی اجازت لینالازم ہوگا ، دفتر میں موجود افراد از خود اس پرنٹر کےبارے میں فیصلہ کر نے کےمجاز نہ ہونگے ۔


کمافی بدائع الصنائع:
وشركة الأملاك نوعان نوع يثبت بفعل الشريكين ۔۔۔۔۔۔۔ أما الذي يثبت بفعلهما فنحو أن يشتريا شيئا اھ(ج6/56)۔

وفیہ ایضا:وهو أن كل واحد من الشريكين كأنه أجنبي في نصيب صاحبه لا يجوز له التصرف فيه بغير إذنه (ج6/65)۔ واللہ اعلم بالصواب