(+92) 0317 1118263

نجاسات اور پاکی

پاک جوتوں پرناپاک جوتے رکھنے سے جوتے نجس ہوں گے یا نہیں

پاک جوتوں پرناپاک جوتے رکھنے سے جوتے نجس ہوں گے یا نہیں فتوی نمبر: 40475

الاستفتاء

سوال : ایک شخص نے مسجدمیں میرے جوتے پر اپنا جوتا رکھا میرا جوتا گیلا تھا معلوم نہیں جوتے کے اندر بھی اس کا جوتا لگا یا نہیں؟ کیا میرا پاؤں جوتا ڈالنے پر نجس ہو گیا یا نہیں؟

الجواب حامدا و مصلیا

مذکورہ شخص کے جوتے پر اگر ظاہری ناپاکی لگی ہوئی نہیں تھی تو اسکا سائل کے جوتے پر جوتا رکھنے سے سائل کا جوتا ناپاک نہیں ہوا، اس لئے ان جوتوں میں پاؤں رکھنے سے سائل کے پاؤں بھی ناپاک نہیں ہوئے، لہٰذا سائل کو بلاوجہ پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔


و فی الهندية: ولو وضع رجله المبلولة على أرض نجسة أو بساط نجس لا يتنجس وإن وضعها جافة على بساط نجس رطب إن ابتلت تنجست ولا تعتبر النداوة. اھ (ج43/1).


وفی الدرالمختار: نام أو مشى على نجاسة، إن ظهر عينها تنجس وإلا لا. ولو وقعت في نهر فأصاب ثوبه، إن ظهر أثرها تنجس وإلا لا. لف طاهر في نجس مبتل بماءإن بحيث لو عصر قطر تنجس وإلا لا.


ولو لف في مبتل بنحو بول، إن ظهر نداوته أو أثره تنجس وإلا لا.(ج349/1) واللہ اعلم بالصواب