(+92) 0317 1118263

احکام نماز

رکوع وسجدہ میں یاک مرتبہ تسبیح کہنا، تیسری اورچوتھی رکعت میں سبحان اللہ کہنا

رکوع وسجدہ میں یاک مرتبہ تسبیح کہنا، تیسری اورچوتھی رکعت میں سبحان اللہ کہنا فتوی نمبر: 40290

سوال

برائےمہربانی میری رہنمائی فرمائیں کہ نماز کیسے اداکروں،میں نےکہیں پڑھا ہے کہ رکوع اور سجود میں ایک ہی مرتبہ سبحان ربی الاعلیٰ اور سبحان ربی العظیم کہنا کافی ہے،اور تیسری چوتھی رکعات میں سورۃ فاتحہ اور کسی سورت کے بجائے سبحان اللہ تین مرتبہ کہنا کافی ہے؟برائے کرم میری رہنمائےکریں مکمل نماز کے بارے، نیت سے لیکر سلام تک، اللہ جزائے خیر دے، مجھ سے کئی عرصے کی نماز چھوٹی ہے۔

الجواب حامدا و مصلیا

رکوع وسجدہ کی تسبیحات سنت ہیں،اور ان کی ادنیٰ مقدار تین بار کہنا ہے،البتہ ایک مرتبہ کی عادت بناکر پڑھنا مکروہ ہے،جبکہ فرض کی پہلی دورکعتوں اور وتر اور نوافل کی تمام رکعتوں میں سورۂ فاتحہ اور اس کے ساتھ کوئی سورۃ پڑھنا واجب ہے،فرض کی تیسری چوتھی رکعات میں صرف سورۃ فاتحہ پڑھنا مستحب ہے،چنانچہ فرض کی تیسری اور چوتھی رکعت میں دانسۃ سورۃ فاتحہ نہ پڑھنے کی عادت بنانا مکروہ ہے،جس سے احتراز چاہیئے،تاہم سائل کو مزید معلومات درکار ہوں تو وہ حضرت مولانا مفتی تقی عثمانی صاحب کی کتاب “نماز سنت کے مطابق اداکریں ” کا مطالعہ کرے ان شاء اللہ نماز کے تمام مسائل معلوم ہوجائنگے۔