(+92) 0317 1118263

طلاق

کیادل میں طلاق دینے سے طلاق ہوجاتی ہے؟

کیادل میں طلاق دینے سے طلاق ہوجاتی ہے؟ فتوی نمبر: 39341

الاستفتاء

اگر دل میں طلاق دی جائے تو طلاق ہوگی یانہیں؟

الجواب حامدا و مصلیا

زبان سے جب تک طلاق کے الفاظ ادا نہ کئے جائیں اس تک فقط دل ہی دل میں طلاق لے الفاظ دھرانے سے طلاق واقع نہ ہوگی۔


کما فی الدر: وشرعا: (رفع قيد النكاح في الحال) بالبائن (أو المآل) بالرجعي (بلفظ مخصوص) هو ما اشتمل على الطلاق، فخرج الفسوخ كخيار عتق وبلوغ وردة، فإنه فسخ لا طلاق. اھ (ج/٣ ص/٢٢٧)


(وفي التاتارخانية: الاصل ان الطلاق انما يقع لوجودلفظ الايقاع من مخاطب في ملکه، اذا طلق المخاطب المکلف امراته وقع الطلاق کالعاقل البالغ اھ (ج/۱ ص/۳۹۲).