(+92) 0317 1118263

مکروہات

کم عمربچوں سے اشعارپڑھوانا

کم عمربچوں سے اشعارپڑھوانا فتوی نمبر: 33821

سوال

حضرت مفتی صاحب! بندہ ایک مسئلہ پوچھنا چاہتا ہے، بندہ نے کچھ فتاویٰ پڑھے جن میں لکھا ہے کہ ’’امرد‘‘ سے اشعار پڑھوانا مکروہ ہے، بعض میں اشعار پڑھنے کی شرائط میں لکھا ہے ’’امرد‘‘ نہ ہو، لیکن بندے نے بعض مدارس میں دیکھا اور بہت سے مدارس کے بارے میں سنا ہے کہ ان کی تقریب میں امرد اشعار پڑھ رہے ہیں۔
اب یہ سمجھ میں نہیں آرہا کہ ہم فتاویٰ کو صحیح سمجھیں یا ان مدارس کے عمل کو؟ مہربانی فرماکر اس اُلجھن کو دور فرمادیں۔

الجواب حامدا و مصلیا

امرد سے اشعار پڑھوانا وہاں مکروہ ہے جہاں ’’امرد‘‘ کے صبیح الوجہ وغیرہ ہونے کی وجہ سے فتنہ کا اندیشہ ہو اور جہاں خوف فتنہ نہ ہو وہاں ’’امرد‘‘ سے اشعار پڑھوانا مکروہ نہیں، لہٰذا دونوں میں کوئی تعارض نہ رہا۔