(+92) 0317 1118263

احکام عمرہ

کسی رشتہ کی طرف سے نفلی طواف کرنا

کسی رشتہ کی طرف سے نفلی طواف کرنا فتوی نمبر: 26926

الاستفتاء

میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ کیا میں زندہ شخص جیسے ماں باپ یا کسی دوسرے رشتہ دار کی طرف سے طواف کرسکتا ہوں؟

الجواب حامدا و مصلیا

جی ہاں! کسی زندہ شخص کی طرف سے نفلی طواف کرنا اور اس کا ثواب اسے بخشناشرعا جائز ہے۔


في الفتاوى الہندیة: الأصل فی ہذا الباب أن الإنسان لہ أن یجعل ثواب عملہ لغیرہ، صلوۃً کان، أو صومًا، أو صدقۃ، أو غیرہا کالحج، وقراءۃ القرآن، والأذکار، وزیارۃ قبور الأنبیاء (إلٰی) وجمیع أنواع البرّ۔ الخ۔ (ج۱، ص۲۵۷) واللہ اعلم!