(+92) 21 32570077

Fatwa - فتوی

Fatwa Category - List of Fatawa |فتاوى دار الافتاء

Fatwa Binoria

زیب و زینت

1 : مختلف پتھروں کی انگوٹھی پہننا اور عقیق پتھر کامبارک ہونا ( 2885) Fatwa: 20937 2 : شوہر کے لئے بازو اور پنڈلی کے بال صاف کرنا ، اور مرد کا سینے کے بال صاف کرنا ( 1451) Fatwa: 20076 3 : خواتین کے لئے سر کے بال کاٹنے کے احکام اور علامہ مودودی کے نظریات ( 1143) Fatwa: 20459 4 : خواتین مصنوعی بالوں کی وگ استعمال کرسکتی ہیں ؟ ( 1064) Fatwa: 20486 5 : Artificial Jewellery پہن کر نماز پڑھنا ( 998) Fatwa: 20113 6 : آرٹیفیشل نقلی پلکیں Eye lashes لگانا اور نقلی سر کے بال لگانا ( 961) Fatwa: 19303 7 : خواتین کے لئے آرٹیفیشل زیورات پہننا جائز ہے یا نہیں ؟ ( 888) Fatwa: 19966 8 : داڑھی پر سیاہ رنگ کا خضاب لگانا ( 853) Fatwa: 24740 9 : خواتین کے لئے دھات کی جیولری پہننا کیسا ہے ؟ ( 846) Fatwa: 17636 10 : لپ اسٹک lipstick لگاکر وضو اور نماز کا حکم ( 792) Fatwa: 3325 11 : جسم پر نقش و نگار بنوانا - Body Tattoos ( 744) Fatwa: 24367 12 : مصنوعی وگ پر وضو اور غسل کے احکام ( 707) Fatwa: 20527 13 : کیا مرد مہندی لگا سکتا ہے ؟ ( 677) Fatwa: 19443 14 : مرد کیلئے سینے اور ٹانگوں کے بال صاف کرنا کیسا ہے؟ ( 651) Fatwa: 19609 15 : چہرے کی سرجری Face Reshaping Surgery کا حکم ( 644) Fatwa: 3375 16 : کیا چہرے کے زائد بال صاف کئے جاسکتے ہیں ؟ ( 639) Fatwa: 19167 17 : سر میں کنگھی کرتے وقت ٹیڑھی مانگ نکالنا ( 624) Fatwa: 24915 18 : مرد کا عقیق کے نگینے والی چاندی کی انگوٹھی پہننا ( 620) Fatwa: 24739 19 : عورت کا شرعی پردہ کے اوپر زیب و زینت اختیار کرنا ( 576) Fatwa: 25638 20 : سونے کی پازیب یعنی پائل پہننا کیسا ہے ؟ ( 548) Fatwa: 20124 21 : عورت کس حد تک بال کاٹ کر چھوٹے کر سکتی ہے ( 543) Fatwa: 29546 22 : خواتین کیلئے لوھے کی انگوٹھی پہننا جائز نہیں ( 512) Fatwa: 24375 23 : کیا مرد سینے کے بال منڈوا سکتا ہے ؟ ( 509) Fatwa: 18974 24 : خواتین کے لئے اونچی ہیل والی جوتیاں پہننا ( 506) Fatwa: 24402 25 : لڑکیوں کا ہاتھ اور پیروں کے ناخن بڑہانا ( 292) Fatwa: 29349 26 : عورت کا آئی بروبنانا ( 122) Fatwa: 11458 27 : کیمرے والے اور اسمارٹ فون کا استعمال ( 73) Fatwa: 23178 28 : عورتوں کے لئے سونے چاندی کے علاوہ کسی اور دھات کی انگوٹھی ( 24) Fatwa: 2518