(+92) 21 32570077

Fatwa - فتوی

Fatwa Category - List of Fatawa |فتاوى دار الافتاء

Fatwa Binoria

آمدنی و مصارف

1 : پڑی ہوئی رقم کا مالک نہ ملے تو کیا کسی غریب کو یا مدرسہ میں دیدی جائے ؟ ( 704) Fatwa: 19808 2 : کیا تعلیم قرآن اور امامت پر اجرت لینا حرام ہے ؟ ( 625) Fatwa: 16792 3 : مدرسہ کے لئے چندہ مانگنے والے کا اپنے لئے حصہ رکھنا ( 609) Fatwa: 17672 4 : بیرون ممالک نوکری کے لئے جھوٹی اسناد کا استعمال ( 588) Fatwa: 20763 5 : نیوز چینل میں کام کی آمدنی ( 523) Fatwa: 24437 6 : بینک کے حرام منافع حرام کام جیسے زنا کی اجرت میں دینا ( 509) Fatwa: 23101 7 : کیا تمباکو کی کاشت کاری حرام ہے؟ ( 502) Fatwa: 19581 8 : ٹیکس کی چوری ، کسٹم ڈیوٹی ادا نہ کرنا اور کمیشن لینا ( 484) Fatwa: 19214 9 : فوٹو گرافی کا پیشہ ( 484) Fatwa: 22181 10 : کمیشن کے احکام ( 470) Fatwa: 23544 11 : اسکول کا جون ، جولائی کی فیس وصول کرنا ( 459) Fatwa: 18826 12 : فون میں گانے لوڈ کرنے کی کمائی ( 444) Fatwa: 24622 13 : کیا State Bank of Pakistan کے Cash department میں نوکری جائز ہے ؟ ( 434) Fatwa: 18442 14 : وراثت میں ملنے والے حرام مال کا حکم ( 429) Fatwa: 24695 15 : سبزی منڈی میں آڑھتی کی بولی لگانے کے بعد کچھ اپنے لئے نکال لینا ( 384) Fatwa: 18078 16 : تائب ہونے کے بعد لوگوں کے حقوق کی ادائیگی ( 324) Fatwa: 17557 17 : پرنٹنگ پریس میں تصاویر اور غیر شرعی امور کا کام ( 303) Fatwa: 22190 18 : موبائل سم میں مخصوص بیلنس پر لائف انشورنس ( 281) Fatwa: 24641 19 : بیوٹی پارلر کا کام کرنا ( 234) Fatwa: 6377 20 : غیر مسلم سے عطیہ قبول کرنا کیسا ہے ؟ ( 206) Fatwa: 24299 21 : جعلی ڈگری کے ذریعے حاصل کی گئی ملازمت اور تنخواہ کا حکم ( 193) Fatwa: 8466 22 : شادی ہال کھولنا اور اس سے حاصل ہونے والی آمدنی ( 175) Fatwa: 27189 23 : گوگل ایڈسینس - Google AdSense - کے ذریعے کمائی ( 164) Fatwa: 8472 24 : جس کی آمدنی خالص حرام ہو تو تائب ہونے کے بعد کیا کرے؟ ( 145) Fatwa: 25295 25 : سرکاری ملازمت کی تنخواہ کا حکم ( 133) Fatwa: 11492 26 : عمر رسیدہ لوگوں کے لئے فنڈ - Post Retirement Benefit - کا حکم ( 111) Fatwa: 4965 27 : غیر مسلم ممالک میں شراب کی خرید و فروخت ( 109) Fatwa: 28759 28 : چارٹرد اکاؤنٹنسی کے طالبعلم کو آڈٹ فرم سے ٹریننگ کے دوران سہولیات کا حصول ( 106) Fatwa: 25080